پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ،اوگر ا نے کابینہ سے منظوری کیوں نہیں لی ؟ کتنا اضافی سیلز ٹیکس لیا جا رہا ہے؟

لاہور ہائیکورٹ نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی نہ کرنے اور اضافی سیلز ٹیکس کی وصولی کے خلاف اپیل پر وفاقی حکومت اور اوگرا سے جواب طلب کر لیا۔گزشتہ روز لاہو رہائیکورٹ کے دو رکنی بنچ نے کیس کی سماعت کی ۔جوڈیشل ایکٹوازم پینل کے اظہر صدیق ایڈووکیٹ کی جانب سے انٹرا کورٹ اپیل میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے اور اضافی سیلز ٹیکس کے اقدام کوچیلنج کرتے ہوئے کہا گیا کہ عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں کمی ہوئی ہے لیکن وفاقی حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کی بجائے

Image result for petrol
سیلز ٹیکس میں اضافہ کردیا جبکہ حکومت پہلے ہی پٹرولیم مصنوعات پر اضافی سیلز ٹیکس وصول کر رہی ہے۔ سیلز ٹیکس میں اضافے کی قومی اسمبلی اور کابینہ سے بھی منظوری نہیں لی گئی ہے۔ استدعا ہے کہ ہائیکورٹ کے سنگل بنچ کے فیصلے کو کالعدم قرار دے کر پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی اور اضافی سیلز ٹیکس کی وصولی روکی جائے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں