کنواروں کے دن پر سال کی سب سے بڑی سیل

چائنہ میں ہر سال گیارہ نومبر کو کنواروں کا دن منایا جاتا ہے۔ گیارہ نومبر کو کنواروں کے دن منانے کی وجہ اس تاریخ میں ہی چھپی ہے۔ گیارہ نومبر میں چار بار ایک (11۔11) آتا ہے جو کہ ایک کنوارے بندے کے اکیلے پن کو ظاہر کرتا ہے۔اِس دن کی بنیاد نانجنگ یونیورسٹی کے طلباء نے 1993ء میں رکھی۔

اُن کی دیکھا دیکھی دوسری یونیورسٹی کے طلباء نے بھی یہ دن منانا شروع کر دیا۔ انٹرنیٹ کے آنے کے بعد اِس دن کو مزید مقبولیت حاصل ہوئی۔ای کامرس کمپنی علی بابا کے بانی جیک ما نے گیارہ نومبر کو آن لائن سیل کی بنیاد ڈالی۔ اس آن لائن سیل کا مقصد کنوارے لوگوں کو اپنے لیے تحائف خریدنے کا موقع مہیا کرنا تھا۔ جیک ما کے مطابق شادی شدہ جوڑے ایک دوسرے کے ساتھ تحائف کا تبادلہ کرتے رہتے ہیں لیکن کنوارے لوگوں کو کوئی تحفے نہیں دیتا۔ گیارہ نومبر کو ہونے والی سیل کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ایسے کنوارے اپنے لیے مختلف قسم کی چیزیں کم داموں پر خرید سکتے ہیں۔

گیارہ نومبر کو چائنہ میں سال کی سب سے بڑی آن لائن سیل لگتی ہے۔ یہ سال گیارہ نومبر کو رات بارہ بجے شروع ہوتی ہے اور چوبیس گھنٹے تک جاری رہتی ہے۔ اس دن تمام کمپنیاں اپنے دام پچاس فیصد تک کم کر لیتی ہیں۔ چینی لوگ گیارہ نومبر سے کئی روز قبل ہی آن لائن ویب سائٹ “تائوبائو” پر اپنی پسندیدہ چیزیں دیکھنا شروع کردیتے ہیں۔ دس نومبر کی رات کو جیسے ہی بارہ بجتے ہیں

اور کیلنڈر پر تاریخ بدلتی ہے وہ تائو بائو کی موبائل ایپ یا ویب سائٹ کھول کر خریداری شروع کر دیتے ہیں۔ پندرہ بیس منٹ کے اندر تمام سٹاک ختم ہو جاتا ہے۔آج گیارہ نومبر کی سیل کے پہلے گھنٹے میں چینی قوم نے علی بابا کی ویب سائٹ پر آٹھ ارب چالیس کروڑ روپے کی خریداری کی اور بارہ گھنٹوں کے بعد یہ رقم اٹھارہ ارب سے بھی زائد ہو گئی ہے۔چینی قوم اس سیل کا فائدہ اٹھاتے ہوئے پورے سال کی ضروریات کا بیشترسامان اسی دن خرید لیتے ہیں۔ گیارہ نومبر کے قریب ڈیلیوری کمپنیوں کا کام بہت بڑھ جاتا ہے۔ دو ہفتے تک ڈیلیوری کمپنیوں کے ملازمین خریداروں کا خریدا ہوا سامان مسلسل ڈیلیور کرتے رہتے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں