سگریٹ نوشی کرنے والےافراد کے پھیپھڑوں کو صاف کرنے کیلئے انتہائی فائدے منداور آزمودہ گھریلوٹوٹکا

سگریٹ پینا صحت کے لئے انتہائی خطرناک ہوتا ہے۔ ایک نئی امریکی تحقیقی کے مطابق یہ بات سامنے آئی ہے کہ سگریٹ میں 600 سے زائد ایسی اشیاء موجود ہوتی ہے جو مختلف طریقوں سے ہماری صحت کو نقصان پہنچاتی ہیں۔

دراصل جب ہم سگریٹ پی رہے ہوتے ہیں تو وہ 7000 سے زائد ٹاکسنز کو خارج کرتی ہے۔ ان میں سے 69 ایسے ہوتے ہیں جو ہمارے جسم میں کینسر کا باعث بن سکتے ہیں۔:سگریٹ جن کیمیکلز اور ٹاکسنز پر مشتمل ہوتی ہے وہ یہ ہیں:بالوں کو ڈائی کرنے والا ایسیٹک ایسڈ:چوہوں کے زہر میں شامل سنکھیا:لائٹر کے مائع میں موجود بیوٹین:پوسٹ مارٹم کے وقت جسم پر لگایا جانے والا ہنود (جس سے اچھی خوشبو پیدا کی جاتی ہے)۔ بیٹری کی پلیٹیوں پر فعال مواد:باربی کیو کے سیال میں موجود ہیکسامائین:پالش ریموور کا ایکٹون:کیڑے مارنے والی اور اس جیسی دوسری مصنوعات میں استعمال ہونے والا نیکوٹین۔سگریٹ پینے والے یا جو پہلے پیتے تھے ان افراد کے پھیپھڑے ٹاکسنز سے بھرے ہوتے ہیں۔تاہم اس سے چھٹکارا حاصل کرنے کے لئے ایک بے حد فائدہ مند مشروب ہے جو صرف تین اہم اجزاء پر مشتمل ہوتا ہے۔ ان اجزاء میں ادرک، پیاز اور ہلدی شامل ہیں۔

کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں