عامر لیاقت پر تاحیات پابندی، سوشل میڈیا اکاؤنٹس بھی بند ؟

معروف اینکر، مذہبی اسکالر اور پاکستانی میڈیا کی متنازعہ ترین شخصیت ڈاکٹر عامر لیاقت حسین پر تا حیات پابندی کیلئے اسلام آباد ہائیکورٹ میں درخواست دائر کر دی گئی۔ درخواست محمد عباس نامی شہری نے ایڈوکیٹ شعیب رزاق کے توسط سے دائر کی۔ درخواست میں عامر لیاقت حسین پر نفرت آمیز مواد پر مشتمل پروگرام اور معاشرے میں تفرقہ پیدا کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے موقف اختیار کیا گیا ہے

کہ نام نہاد عالم میڈیا کےذریعے کئی سالوں سے مذہبی اور معاشرتی منافرت پھیلا رہا ہے، عامر لیاقت کے پاس اسلامی تعلیمات کی کوئی ڈگری نہیں۔ درخواست میں مزید کہا گیا ہے کہ عامر لیاقت ذہنی طور پر بیمار ہیں جن کے فتوئوں کے باعث کئی لوگوں کی زندگی کو سنگین خطرات لا حق ہوئے جس کا اعتراف کرتے ہوئے وہ ٹی وی پر سر عام معافی مانگ چکے ہیں۔ درخواست میں پیمرا اور پی ٹی اے کو فریق بناتے ہوئے کہا گیا ہے کہ عامر لیاقت نے متعدد مرتبہ پیمرا کے ضابط اخلاق کی خلاف ورزی کی ہے، مگر پیمرا اس حوالے سے اپنی ذمہ داری پوری کرنے میں ناکام رہا ۔ عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ عامر لیاقت کیلئے پرنٹ اور الیکٹرانگ میڈیا پر تا حیات پابندی عائد کرنے سمیت پی ٹی اے کو سوشل میڈیا پر عامر لیاقت کے تمام اکائونٹ بند کرنے کا حکم جاری کیا جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں